روس سے چین تک سلک وے کار ریلی

 سلک وے کار ریلی کا آغاز 2009 میں ہوا تھا اور یہ ریس روس کے شہر قازان سے ترکمانستان کے شہر اشک آباد تک تھی۔

 

تاہم 2010 سے 2013 تک یہ کار ریلی صرف روس کی حد تک محدود رہی۔ 2016 میں اس ریس کا آغاز ماسکو سے ہوا اور اس کا اختتام بیجنگ میں ہو گا۔

 سلک وے ریلی داکار ریلی سے طویل ہے۔ نو جولائی سے شروع ہونے والی اس ریس میں ڈرائیورز 10734 کلومیٹر طویل روٹ پر ریس کریں گے جس میں روس کے جنگلات ہیں تو قزاقستان کے دشت بھی ہیں اور چین کے ٹیلے بھی ہیں۔

 اس ریس کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ ’یہ ریس وہ نہیں جیتتے جو تیز چلاتے ہیں بلکہ وہ جیتتے ہیں جن کی گاڑی خراب نہیں ہوتی۔‘

 سلک وے ریلی کے ڈائریکٹر ویلادیمیر چاگن کا کہنا ہے ’یہ ایک نہایت دشوار کھیل ہے جو دو ہفتے جاری رہتا ہے۔‘

 اس قسم کی جدید کار ریسنگ کا آغاز 1979 میں پیرس سے داکار ریلی سے ہوا جو صحرائے صحارا سے گزرتی ہے۔ یہ ریلی دشوار ہونے کے باعث کافی مشہور ہوئی جس میں کئی ڈرائیور اپنی جان کھو بیٹھے۔ لیکن اس ریلی کی شہرت اس وقت کم ہوئی جب ریلی کو 2009 میں ساؤتھ امریکہ منتقل کر دیا گیا۔

 2016 کی سلک وے ریلی میں 40 ممالک سے ڈرائیور حصہ لے رہے ہیں۔ اس ریلی کے روٹ پر زیادہ لوگوں کو تجربہ نہیں ہے اور اس میں حصہ لینے کی فیس پانچ ہزار پاؤنڈ ہیں جو کہ داکار ریلی کی فیس سے آدھی ہے۔

 ابھی تک سلک وے ریلی کا روٹ اتنا دشوار گزار نہیں رہا جتنا داکار ریلی کا ہوتا تھا لیکن کہا جا رہا ہے کہ ڈرائیوروں کا صحیح امتحان اس وقت ہو گا جب وہ چین میں داخل ہوں گے۔

 

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s