دنیا استنبول کے غم میں نڈھال کیوں نہیں؟

استنبول کے ہوائی اڈے پر دہشت گردی کے واقعے کے بعد فیس بُک نے ترک جھنڈے میں پروفائل پکچر کو ملبوس کرنے کا آپشن نہیں دیا اور اس پر بڑی تعداد میں لوگوں نے تنقید کی۔ پیرس اور برسلز حملوں کے بعد سوشل میڈیا اور روایتی میڈیا میں اس خبر کی کوریج کے حوالے سے سوالات اٹھنا معمول کی بات ہے کہ پیرس پر اتنی کوریج کیوں اور بیروت یا لاہور پر کیوں نہیں؟
جہاں صارفین کی جانب سے خبروں میں دلچسپی میں امتیاز برتنے کی بات درست ہے وہیں سوشل میڈیا ویب سائٹس کی جانب سے ایسے مواقع پر مختلف سہولیات کی فراہمی میں امتیاز برتنے کی بات بھی درست ہے۔ مگر سوال یہ ہے کہ اگر میں اپنی پروفائل کی تصویر کو ترکی یا فرانس کے جھنڈے میں نہیں لپیٹتا تو کیا اس سے یہ مراد لینا درست ہے کہ مجھے اتنا دکھ نہیں جنتا ایسا کرنے والے کو ہے؟

Advertisements

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out / Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out / Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out / Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out / Change )

Connecting to %s